نثار تیری گلیوں کے اے وطن کہ جھاں ، چلی ہے رسم کہ کوءی نہ سر اٹھا کے چلے۔ یہ شعر کس کا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top