یہ شعر کس کا ہے؟ جس کھیت سے دہقاں کو میسر نہیں روزی اس کھیت کے ہر فرد گندم کو جلادو

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top